Monday May ۲۰, ۲۰۱۹

(ن) لیگ کا نواز شریف کی جیل منتقلی کے موقع پر سیاسی قوت کے مظاہرے کا فیصلہ

شہباز شریف کے مصالحتی بیانیے کی بجائے نواز شریف کے سخت گیر بیانیے کو ہی پارٹی کا اصل بیانیہ گردانے جانے کا اعلان متوقع

پاکستان مسلم لیگ (ن) کی قیادت نے اپنے پارٹی قائد نواز شریف کی ضمانت کی مدت ختم ہونے پر 7 مئی کی رات جاتی امرا سے کوٹ لکھپت جیل منتقلی کے موقع پر سیاسی قوت کا مظاہرہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مسلم لیگ (ن) کی نئی تنظیم سازی کے بعد گزشتہ روز ماڈل ٹاؤن لاہور میں مسلم لیگ (ن) کے مرکزی سیکرٹریٹ میں نئے سینئر نائب صدر شاہد خاقان عباسی، مرکزی سیکرٹری جنرل احسن اقبال اور مسلم لیگ (ن) پنجاب کے نئے صدر رانا ثناء اللہ کی مشترکہ صدارت میں اجلاس ہوا۔

پارٹی کے اندرونی ذرائع کے مطابق اجلاس کے دوران محمد نواز شریف کی 7 مئی کی رات جیل منتقلی کے لئے حکمت عملی پر غور کیا گیا۔ کچھ اراکین اسمبلی کی رائے تھی کہ نواز شریف نے ریلی وغیرہ کی صورت میں جانے سے منع کیا ہے اس لئے نواز شریف کی ہدایت اور رمضان المبارک کی وجہ سے کارکنوں کو جاتی امرا آنے سے منع کردیا جائے جبکہ زیادہ تر رہنماؤں کی رائے تھی کہ پارٹی کارکنوں کو متحرک اور فعال رکھنے کے لئے نواز شریف کی جیل منتقلی کے موقع پر سیاسی قوت کا مظاہرہ کیا جائے۔

About The Author

Related posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *