جمعرات 27 جون 2019

سعودی ولی عہد کی بہن کا ملازم پر تشدد کے الزام کے تحت ٹرائل

سعودی ولی عہد کی بہن کا ملازم پر تشدد کے الزام کے تحت ٹرائل

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی بہن شہزادی حصہ کے خلاف یورپی ملک فرانس میں ملازم پر تشدد کروانے اور انہیں پاؤں چومنے پر مجبور کرنے کے تحت آئندہ ماہ سے عدالتی ٹرائل کا آغاز ہوگا۔

سعودی فرماں روا سلمان بن عبدالعزیز کی صاحبزادی شہزادی حصہ پر الزام ہے کہ انہوں نے اپنے محافظ کے ذریعے گھر کی تزئین و آرائش کرنے والے ایک ملازم پر تشدد کروایا۔

شہزادی حصہ پر الزام ہے کہ انہوں نے گھر کی تزئین و آرائش کرنے والے ملازم کو گستاخی کرنے کے بعد غلطی کا ازالہ کرنے کے طور پر پاؤں چومنے کے لیے بھی مجبور کیا۔

شہزادی حصہ کی جانب سے محفاظ کے ذریعے ملازم پر تشدد کروانے کا واقعہ 2016 میں پیش آیا اور فرانسیسی دارالحکومت پیرس کی پولیس نے واقعے کا مقدمہ بھی دائر کر رکھا ہے۔

واقعے کا مقدمہ شہزادی حصہ نہیں بلکہ ان کے محافظ پر دائر کیا گیا، تاہم شہزادی پر الزام ہے کہ ملازم پر تشدد ان کے کہنے پر کیا گیا۔

اسی کیس میں فرانس کی عدالت نے مارچ 2018 میں شہزادی کی گرفتاری اور انہیں عدالت میں پیش کرنے کے عالمی وارنٹ گرفتاری بھی جاری کیے تھے۔

اور اب فرانس کی عدالت نے اسی کیس کی سماعت آئندہ ماہ مقرر کردی۔

About The Author

Related posts